Dr. Allama Muhammad Iqbal is the national poet of Pakistan. He was born on 9th November, 1877. This blog is about the life and poetry of Allama Iqbal. This Blog has the poerty of Iqbal in Urdu, Roman Urdu and English translation.

Post Top Ad

Post Top Ad

Teri Nigah Fromaya Hath Hai..

تری نگاہ فرومايہ ، ہاتھ ہے کوتاہ


تری نگاہ فرومايہ ، ہاتھ ہے کوتاہ
ترا گنہ کہ نخيل بلند کا ہے گناہ
گلا تو گھونٹ ديا اہل مدرسہ نے ترا
کہاں سے آئے صدا 'لا الہ الا اللہ'
خودی ميں گم ہے خدائی ، تلاش کر غافل
يہی ہے تيرے ليے اب صلاح کار کی راہ
حديث دل کسی درويش بے گليم سے پوچھ
خدا کرے تجھے تيرے مقام سے آگاہ
برہنہ سر ہے تو عزم بلند پيدا کر
يہاں فقط سر شاہيں کے واسطے ہے کلاہ
نہ ہے ستارے کی گردش ، نہ بازی افلاک
خودی کی موت ہے تيرا زوال نعمت و جاہ
اٹھا ميں مدرسہ و خانقاہ سے غم ناک
نہ زندگی ، نہ محبت ، نہ معرفت ، نہ نگاہ

No comments:

Post a Comment