Dr. Allama Muhammad Iqbal is the national poet of Pakistan. He was born on 9th November, 1877. This blog is about the life and poetry of Allama Iqbal. This Blog has the poerty of Iqbal in Urdu, Roman Urdu and English translation.

Post Top Ad

Taza Phir Danish e Hazir...

تازہ پھر دانش حاضر نے کيا سحر قديم


تازہ پھر دانش حاضر نے کيا سحر قديم
گزر اس عہد ميں ممکن نہيں بے چوب کليم
عقل عيار ہے ، سو بھيس بنا ليتی ہے
عشق بے چارہ نہ ملا ہے نہ زاہد نہ حکيم
عيش منزل ہے غريبان محبت پہ حرام
سب مسافر ہيں ، بظاہر نظر آتے ہيں مقيم
ہے گراں سير غم راحلہ و زاد سے تو
کوہ و دريا سے گزر سکتے ہيں مانند نسيم
مرد درويش کا سرمايہ ہے آزادی و مرگ
ہے کسی اور کی خاطر يہ نصاب زر و سيم

No comments:

Post a Comment