Dr. Allama Muhammad Iqbal is the national poet of Pakistan. He was born on 9th November, 1877. This blog is about the life and poetry of Allama Iqbal. This Blog has the poerty of Iqbal in Urdu, Roman Urdu and English translation.

Post Top Ad

Post Top Ad

Raha Na Halqa E Sufi Main...

رہا نہ حلقہ صوفی ميں سوز مشتاقی


رہا نہ حلقہ صوفی ميں سوز مشتاقی
فسانہ ہائے کرامات رہ گئے باقی
خراب کوشک سلطان و خانقاہ فقير
فغاں کہ تخت و مصلی کمال زراقی
کرے گی داور محشر کو شرمسار اک روز
کتاب صوفی و ملا کی سادہ اوراقی
نہ چينی و عربی وہ ، نہ رومی و شامی
سما سکا نہ دو عالم ميں مرد آفاقی
مئے شبانہ کی مستی تو ہو چکی ، ليکن
کھٹک رہا ہے دلوں ميں کرشمہ ساقی
چمن ميں تلخ نوائی مری گوارا کر
کہ زہر بھی کبھی کرتا ہے کار ترياقی
عزيز تر ہے متاع امير و سلطاں سے
وہ شعر جس ميں ہو بجلی کا سوز و براقی

No comments:

Post a Comment