Hzar Khof Ho Laiken Zuban Ho Dil Ki Rafeeq

Tags

ہزار خوف ہو ليکن زباں ہو دل کی رفيق


ہزار خوف ہو ليکن زباں ہو دل کی رفيق
يہی رہا ہے ازل سے قلندروں کا طريق
ہجوم کيوں ہے زيادہ شراب خانے ميں
فقط يہ بات کہ پير مغاں ہے مرد خليق
علاج ضعف يقيں ان سے ہو نہيں سکتا
غريب اگرچہ ہيں رازی کے نکتہ ہائے دقيق
مريد سادہ تو رو رو کے ہو گيا تائب
خدا کرے کہ ملے شيخ کو بھی يہ توفيق
اسی طلسم کہن ميں اسير ہے آدم
بغل ميں اس کی ہيں اب تک بتان عہد عتيق
مرے ليے تو ہے اقرار باللساں بھی بہت
ہزار شکر کہ ملا ہيں صاحب تصديق
اگر ہو عشق تو ہے کفر بھی مسلمانی
نہ ہو تو مرد مسلماں بھی کافر و زنديق


EmoticonEmoticon