Khush Hal Khan Ki Wasiat

Tags

خوشحال خاں کي وصيت



قبائل ہوں ملت کي وحدت ميں گم
کہ ہو نام افغانيوں کا بلند
محبت مجھے ان جوانوں سے ہے
ستاروں پہ جو ڈالتے ہيں کمند
مغل سے کسي طرح کمتر نہيں
قہستاں کا يہ بچہء ارجمند
کہوں تجھ سے اے ہم نشيں دل کي بات
وہ مدفن ہے خوشحال خاں کو پسند
اڑا کر نہ لائے جہاں باد کوہ
مغل شہسواروں کي گرد سمند
---------------------------

ء کو مغلوں خوشحال خاں خٹک پشتوزبان کا مشہور وطن دوست شاعر تھا جس نے
ميں سو کي -قبائل ميں سے آزادکرانے کے ليے سرحد کے افغاني قبائل کي ايک
انگريزي نظموں کا صرف آفريديوں نے آخردم تک اس کا ساتھ ديا- اس کي
ترجمہجمعيت قائم1862لندن ميں شائع ہوا تھاقريبا ً ايک افغانستان


EmoticonEmoticon