Javed Ke Naam

Tags

جاويد کے نام



خودی کے ساز ميں ہے عمر جاوداں کا سراغ
خودی کے سوز سے روشن ہيں امتوں کے چراغ
يہ ايک بات کہ آدم ہے صاحب مقصود
ہزار گونہ فروغ و ہزار گونہ فراغ
ہوئی نہ زاغ ميں پيدا بلند پروازی
خراب کر گئی شاہيں بچے کو صحبت زاغ
حيا نہيں ہے زمانے کی آنکھ ميں باقی
خدا کرے کہ جوانی تری رہے بے داغ
ٹھہر سکا نہ کسی خانقاہ ميں اقبال
کہ ہے ظريف و خوش انديشہ و شگفتہ دماغ


EmoticonEmoticon