Dr. Allama Muhammad Iqbal is the national poet of Pakistan. He was born on 9th November, 1877. This blog is about the life and poetry of Allama Iqbal. This Blog has the poerty of Iqbal in Urdu, Roman Urdu and English translation.

Post Top Ad

Ne Mohra Baqi..

نے مہرہ باقی ، نے مہرہ بازی


نے مہرہ باقی ، نے مہرہ بازی
جيتا ہے رومی ، ہارا ہے رازی
روشن ہے جام جمشيد اب تک
شاہی نہيں ہے بے شيشہ بازی
دل ہے مسلماں ميرا نہ تيرا
تو بھی نمازی ، ميں بھی نمازی!
ميں جانتا ہوں انجام اس کا
جس معرکے ميں ملا ہوں غازی
ترکی بھی شيريں ، تازی بھی شيريں
حرف محبت ترکی نہ تازی
آزر کا پيشہ خارا تراشی
کار خليلاں خارا گدازی
تو زندگی ہے ، پائندگی ہے
باقی ہے جو کچھ ، سب خاک بازی

No comments:

Post a Comment