Dr. Allama Muhammad Iqbal is the national poet of Pakistan. He was born on 9th November, 1877. This blog is about the life and poetry of Allama Iqbal. This Blog has the poerty of Iqbal in Urdu, Roman Urdu and English translation.

Post Top Ad

Khudi Ho ILm Se Mehkam..

خودی ہو علم سے محکم تو غيرت جبريل


خودی ہو علم سے محکم تو غيرت جبريل
اگر ہو عشق سے محکم تو صور اسرافيل
عذاب دانش حاضر سے باخبر ہوں ميں
کہ ميں اس آگ ميں ڈالا گيا ہوں مثل خليل
فريب خوردہ منزل ہے کارواں ورنہ
زيادہ راحت منزل سے ہے نشاط رحيل
نظر نہيں تو مرے حلقہ سخن ميں نہ بيٹھ
کہ نکتہ ہائے خودی ہيں مثال تيغ اصيل
مجھے وہ درس فرنگ آج ياد آتے ہيں
کہاں حضور کی لذت ، کہاں حجاب دليل!
اندھيری شب ہے ، جدا اپنے قافلے سے ہے تو
ترے ليے ہے مرا شعلہ نوا ، قنديل
غريب و سادہ و رنگيں ہے داستان حرم
نہايت اس کی حسين ، ابتدا ہے اسمعيل

No comments:

Post a Comment