Ameen Raaz Hai Mardaan e Hur Ki Derveshi

Tags

امين راز ہے مردان حر کی درويشی


امين راز ہے مردان حر کی درويشی
کہ جبرئيل سے ہے اس کو نسبت خويشی
کسے خبر کہ سفينے ڈبو چکی کتنے
فقيہ و صوفی و شاعر کی نا خوش انديشی
نگاہ گرم کہ شيروں کے جس سے ہوش اڑ جائيں
نہ آہ سرد کہ ہے گوسفندی و ميشی
طبيب عشق نے ديکھا مجھے تو فرمايا
ترا مرض ہے فقط آرزو کی بے نيشی
وہ شے کچھ اور ہے کہتے ہيں جان پاک جسے
يہ رنگ و نم ، يہ لہو ، آب و ناں کی ہے بيشی


EmoticonEmoticon