Dr. Allama Muhammad Iqbal is the national poet of Pakistan. He was born on 9th November, 1877. This blog is about the life and poetry of Allama Iqbal. This Blog has the poerty of Iqbal in Urdu, Roman Urdu and English translation.

Post Top Ad

Post Top Ad

Ghazal (Kushada dast e karam)



کشادہ دست کرم جب وہ بے نياز کرے
نياز مند نہ کيوں عاجزی پہ ناز کرے
بٹھا کے عرش پہ رکھا ہے تو نے اے واعظ
خدا وہ کيا ہے جو بندوں سے احتراز کرے
مری نگاہ ميں وہ رند ہی نہيں ساقی
جو ہوشياری و مستی ميں امتياز کرے
مدام گوش بہ دل رہ ، يہ ساز ہے ايسا
جو ہو شکستہ تو پيدا نوائے راز کرے
کوئی يہ پوچھے کہ واعظ کا کيا بگڑتا ہے
جو بے عمل پہ بھی رحمت وہ بے نياز کرے
سخن ميں سوز ، الہی کہاں سے آتا ہے
يہ چيز وہ ہے کہ پتھر کو بھی گداز کرے
تميز لالہ و گل سے ہے نالۂ بلبل
جہاں ميں وا نہ کوئی چشم امتياز کرے
غرور زہد نے سکھلا ديا ہے واعظ کو
کہ بندگان خدا پر زباں دراز کرے
ہوا ہو ايسی کہ ہندوستاں سے اے اقبال
اڑا کے مجھ کو غبار رہ حجاز کرے

No comments:

Post a Comment