Hindustani Bachon ka Geet

ہندوستانی بچوں کا قومی گيت


چشتیي نے جس زميں ميں پيغام حق سنايا
نانک نے جس چمن ميں وحدت کا گيت گايا
تاتاريوں نے جس کو اپنا وطن بنايا
جس نے حجازيوں سے دشت عرب چھڑايا

ميرا وطن وہی ہے ، ميرا وطن وہی ہے

يونانيوں کو جس نے حيران کر ديا تھا
سارے جہاں کو جس نے علم و ہنر ديا تھا
مٹی کو جس کی حق نے زر کا اثر ديا تھا
ترکوں کا جس نے دامن ہيروں سے بھر ديا تھا

ميرا وطن وہی ہے، ميرا وطن وہی ہے

ٹوٹے تھے جو ستارے فارس کے آسماں سے
پھر تاب دے کے جس نے چمکائے کہکشاں سے
وحدت کی لے سنی تھی دنيا نے جس مکاں سے
مير عرب کو آئی ٹھنڈی ہوا جہاں سے

ميرا وطن وہی ہے، ميرا وطن وہی ہے

بندے کليم جس کے ، پربت جہاں کے سينا
نوح نبی کا آ کر ٹھہرا جہاں سفينا
رفعت ہے جس زميں کی بام فلک کا زينا
جنت کی زندگی ہے جس کی فضا ميں جينا

ميرا وطن وہی ہے، ميرا وطن وہی ہے


EmoticonEmoticon